Urdu

آمنہ شیخ اور صنم سعید نے مردوں کے بارے میں یہ کیا کہ ڈالا

ہمارے پاکستان میں اب ایک ٹرینڈ بن چکا ہے کہ تھوڑی پڑھی لکھی خواتین گھریلو ذمہ داریوں اور معاشرتی قید و بند سے بھگانے کے لئے فیمینزم کا نعرہ لگاتی ہے اور عجیب طرح کے حقوق کا دعوہ کرتی ہے جس کے بارے میں کوئی بھی ذی شعور سوچتا ہے کہ اس حق کو مانگنے اور اس پر اصرار کرنے کی کیا وجہ ہو سکتی ہے ۔ شوبز سے تعلق رکھنے والی اکثر خواتین

خود کو اسی گروپ میں شمار کرتی ہے اور وہ خود کو کسی بھی حیثیت میں مرد سےکم نہیں سمجھتی ۔ گزشتہ روز صنم سعید سے جب پوچھا گیا کہ کیا آپ بھی اس خاص گروپ سے ہے تو انہوں نے واضح طور پر انکار کیا اور کہا کہ مرد کی اپنی ایک جگہ ہے اور عورت کی اپنی جگہ دونوں کہا برابر ہو

سکتے ہیں ۔ مگر جب ان کے ماضی کے ایک انٹرویو کی جھلک دکھا ئی گئی جس میں انہوں نے واضح طور پر خود کو فیمنسٹ یعنی حقوق نسواں کا علمبردار قرار دیا تھا تو صنم سعید کا ردعمل بہت عجیب و غریب تھا ان کا کہنا تھا کہ مردوں سے نفرت کرنا اور ان کے جسم پر موجود بالوں کی وجہ سے الجھن محسوس کرنا درحقیقت فیمنیزم نہیں ہے ۔ صنم سعید کی ان قلابازیوں کے سبب دیکھنے والے اس حوالے سے کنفیوژن کا شکار ہو گۓ کہ اداکارہ حقیقی معنوں میں اصل میں کیا چاہ رہی ہیں

ٹی وی انٹرویو میں اسی حوالے سے جب آمنہ شیخ سے سوال پوچھا گیا تو انہوں نے بھی خود کو فیمنسٹ ماننے سے انکار کرتے ہوۓ اس کی وجہ یہ بتائی کہ اس ٹرم کو جس طرح پروپیگنڈے کے لیۓ استعمال کیا جارہا ہے اس نے اس حوالےسے اس کی تعریف ہی بدل ڈالی ہے ۔

Comments

comments

آمنہ شیخ اور صنم سعید نے مردوں کے بارے میں یہ کیا کہ ڈالا
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top