Urdu

امریکہ کے ڈرونز روسی ٹیکنالوجی کی زد میں مچھروں کی طرح گرتے رہیں

شام میں گزشتہ 7 سال سے خانہ جنگی چل رہی ہے جو کہ اس وقت کے جابر بشار الاسد کے خلاف جنگ سے ہوئی لیکن اس نے کمال چلاکی سے اسے شیعہ سنی جنگ میں بدل ڈالا جس کے بعد عراق، ایران کے شیعہ بھی اس جنگ میں کھود پڑے اور لاکھوں کی تعداد میں سنیوں کا قتل عام کیا گیا ۔ حالانکہ شیعہ کی تعداد شام میں بے حد کم ہے ۔ اس جنگ میں عالمی کنٹرول حاصل کرنے اور اپنے لئے وفاداریاں خریدنے کے لئے امریکہ اور روس بھی کھود پڑے ۔، شام کو جھکاو روس کی طرف رہا اس وجہ سے روس نے اس کی خوب مدد کی اور اپنی فوجیں اس کی مدد کے لئے بھیج دی جس کے بعد امریکہ کو خیال آیا کہ تیل سے بھرا ملک روس کے پاس کیوں جا رہاہے اس لئے اس نے نئی چال چلی ۔

برطانوی وزیراعظم تھریسا مے نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور فرانسیسی صدرایمانویل میکرون کو فون کیا ہے۔ان سربراہان کا گفتگو کے دوران شام کے خلاف امریکا، برطانیہ، فرانس کا مشترکہ کارروائی پر اتفاق ہوگیا۔ایرانی نیوز ایجنسی کے مطابق روس نے شام میں فوج کو ہائی الرٹ کر دیاہے۔دوسری جانب امریکی میڈیا نے کہا کہ روس نے شام میں آنے والے امریکی ڈرون جام کرنا شروع کر دیے، سگنلز جام کیے جانے کے سبب امریکی ڈرون گر کر تباہ ہوگئےیا ناکارہ ہو گئے۔برطانوی وزیراعظم تھریسا مے نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور فرانسیسی صدرایمانویل

میکرون کو فون کیا ہے۔انسربراہان کا گفتگو کے دوران شام کے خلاف امریکا، برطانیہ، فرانس کا مشترکہ کارروائی پر اتفاق ہوگیا۔ایرانی نیوز ایجنسی کے مطابق روس نے شام میں فوج کو ہائی الرٹ کر دیا۔دوسری جانب امریکی میڈیا نے کہا کہ روس نے شام میں آنے والے امریکی ڈرون جام کرنا شروع کر دیے، سگنلز جام کیے جانے کے سبب امریکی ڈرون گر کر تباہ ہوگئے یا ناکارہ ہو گئے۔

Comments

comments

امریکہ کے ڈرونز روسی ٹیکنالوجی کی زد میں مچھروں کی طرح گرتے رہیں
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top