Urdu

اپنی بیوی سے ہر تیسرے دن لازمی ہمبستری کیا کرو کیونکہ۔۔۔ حضرت عمر ؓ نے یہ فتویٰ کیوں دیا

سیدنا عمرؓ کے پاس کعب اسدی تشریف فرما تھے، ایک خاتون آئی اورآ کر کہنے لگی: امیر المومنین! میرا خاوند بہت نیک ہے، ساری رات تہجد پڑھتا رہتا ہے، اور سارا دن روزہ رکھتا ہے،-۔جاری ہے ۔

اور یہ کہہ کر خاموش ہو گئی، عمرؓ بڑے حیران کہ خاتون کیا کہنے آئی ہے؟ اس نے پھر یہی بات دہرائی کہ میرا خاوند بہت نیک ہے، ساری رات تہجد میں گزار دیتا ہے اور سارا دن روزہ رکھتا ہے،اس پر کعبؒ بولے: اے امیرالمومنین! اس نے اپنے خاوند کی بڑے اچھے انداز میں شکایت کی ہے، کیسے شکایت کی؟امیرالمومنین! جب وہ ساری رات تہجد پڑھتا رہے گا اور سارا دن روزہ رکھے گا تو پھر بیوی کو وقت کب دے گا؟ تو کہنے آئی ہے کہ میرا خاوند نیک تو ہے-۔جاری ہے ۔

Comments

comments

اپنی بیوی سے ہر تیسرے دن لازمی ہمبستری کیا کرو کیونکہ۔۔۔ حضرت عمر ؓ نے یہ فتویٰ کیوں دیا
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top