Urdu

ای کوڈ کیا ہے ؟ کھانا حلا ل ہے یا حرام اس کا پتا کیسے چلتا ہے

آج کل بازار میں بکثرت ایسی چیزیں فروخت ہورہی ہیں، جن کے بارے میں مشہور کردیاگیا ہے کہ ان میں خنزیر کی چربی کی ملاوٹ ہے، جس کی وجہ سے لوگ پریشان ہیں کہ آیا ایسی چیزوں کا استعمال شرعاً جائز ہے یا نہیں، اگر ناجائز ہے تو پھراس سے بچنے کی کیا شکل اور کیا تدبیر ہے، خاص کر ایسے وقت میں جب کہ ایسی چیزیں دھڑا دھڑ فروخت ہورہی ہیں اور ہر جگہ دستیاب ہیں اور لوگ ان کے استعمال کے عادی ہوگئے ہیں، تو پھر ان سے کیونکر بچا جاسکتا ہے۔دراصل ہر کمپنی کا ایک مخصوص نمبر ہوتاہے جو کہ ان کے اشیاء کے اوپر لگایا جاتا ہے تا کہ اس میں‌استعمال ہونے والے اجزاء کا علم ہو اور ان کی پروڈکٹ دوسرے سے کیوں‌مختلف ہے اس کا بھی ان کے کسٹمر کو پتا چلتا

رہے . مطلب اس کوڈ میں‌مکمل تفصٰلات ہوتی ہے جو کہ اس پروڈکٹ کے بارے میں‌جاننا ان کے کسٹمر کے لئے ضروری ہوتا ہے . اسکی شروعات یورپ میں ہوئی . لیکن جیسے ہی برآمدات اور درآمدات کا سلسلہ چل نکلا تو ہر ملک کی مختلف علامات ہونے کی وجہ سے صارف کےلئے اجزاء کلے بارے میں‌جاننا مشکل ہوگیا . جس کے بعد ضرورت محسوس ہوئی کہ ایک ایسا کوڈہونا چاہئے جو کہ تمام ممالک میں‌یکسا استعمال ہو . اور ہر جگہ کے گاہگ اس کو پڑھ کر سمجھ سکے . جس کے بعد ایک مکمل لسٹ بنائی گئی . اب جو بھی کوئی چیز بناتا ہے اس کے اوپر اجزاء کی تفصیل کے ساتھ ساتھ کوڈ بھی لکھیں‌ہوتے ہیں اور یہ کوڈ اس بین الاقوامی لسٹ کے تابع ہوتے ہیں‌. جس کی وجہ سے کوئی بھی
ان کو جان سکتا ہے کہ اس میں‌کیا کچھ استعمال کیا گیا ہے .،

ای کوڈ کےبارے میں‌کہا جاتا ہے کہ یہ حرام اشیاء پر مشتمل اشیاء کے لئے ہوتا ہے لیکن اس کی تصدیق کافی مشکل ہوتی ہے کیونکہ اشیاء کی تیاری میں‌یہ مختلف چیزوں‌کا استعمال کرتے ہیں اور ان کے ہاں حلال و حرام کا کوئی تصور ہی نہیں‌، اس کے ساتھ وہاں‌سور اور اس کے گوشت کا کاروبارع بہت وسیع ہوتا ہے اور یہ جاننا مشکل ہوتا ہے کہ کس کس چیز میں اس کا استعمال کیا گیا . لیکن بھلا ہو انٹرنیٹ کا کہ جتنے بھی کوڈہے وہ آپ انٹرنیٹ پر دیکھ سکتے ہیں‌کہ اس کی تیاری میں‌کیا کچھ استعمال کیا گیا ہے اور اس میں‌کتنے اجزاء ایسے ہیں‌جو کہ حرام ہے .


اس لئے کوئی بھی چیز لیں‌تو اس پر لگے کوڈ کو ضرو پڑھیں‌اور نیٹ پر دیکھیں‌کہ اس میں‌کیا استعما ل کیا گیا ہے ،اس کے ساتھ یاد رکھیں کہ جن اشیاء پر لکھا ہو کلہ اس میں‌جانور کی چربی کا استعمال کیا گیا ہے اس سے احتیاط کریں کیونکہ ممکن ہے حرام جانور کی ہو . اس کے ساتھ جو کوڈ مسلم علماء کی نگرانی میں کام کرنے والی لیبارٹری نے حرام قرار دی ہے ان کی بھی مکمل لسٹ‌موجود ہے .

Comments

comments

ای کوڈ کیا ہے ؟ کھانا حلا ل ہے یا حرام اس کا پتا کیسے چلتا ہے
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top