Urdu

نازیہ اقبال کا بھائی کیا کرتا تھا اور اسے کیوں گھر میں رکھا گیا تھا

گزشتہ روز خبر آئی تھی کہ نازیہ اقبال نے راولپنڈی کے علاقہ روات کے تھانہ میں اپنے بھائی کے خلاف رپورٹ درج کرائی ۔ اور ایسی وج بتائی کہ جس نے بھی سنا ہاتھ ملتے رہ گیا ۔ نازیہ اقبال نے روتے ہوئے بیان دیا کہ صبح میری چھوٹی بیٹی کے رونے کی آواز آئی جب میں نے اٹھ کر دیکھا تو میرا چھوٹا بھائی اس کے ساتھ جنسی درندگی میں مشغول تھا میرے شور سے وہ بھاگ گیا ۔


یاد رکھیں نازیہ اقبال ایک پشتو کی مشہور گلوکارہ ہے اور ان کے گانے بہے حس مشہور ہے ۔، دن رات مخلتف پروگراموں میں مصروفیت کی وجہ سے وہ اور ان کے شوہر اپنی بیٹیوں کا خیال نہیں رکھ پا رہے تھے اس لئے انہوں نے غیروں پر اعتماد کرنے کے بجائے اپنے چھوٹے بھائی کو سوات سے بلا لیا اور کہا کہ ہماری غیر موجودگی میں ہماری بیٹیوں کا خیال رکھنا ۔ لیکن

گھر ہی جل اٹھا گھر کے چراغ سے کے مصداق اپنے ماموں نے ان کی معصومیت کو چھین لیا ۔ نازیہ اقبال کا کہنا ہے کہ میں اس بھائی کو چھوڑوں گی نہیں اور اسے سزا دلا کر رہوں گی اور میں تمام بہنوں سے درخواست کرتی ہوں کہ کسی پر بھی بچیوں کے معاملے میں اعتبار نہ کریں ۔

Comments

comments

نازیہ اقبال کا بھائی کیا کرتا تھا اور اسے کیوں گھر میں رکھا گیا تھا
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top