Urdu

پاکستان میں یہ خطرناک بیماری تیزی سے پھیل رہی ہے ۔ ماہرین کا انتباہ

ٹائفائید ایک قابل علاج بیماری ہے بشرطیکہ اس کا وقت پر مکمل علاج کی اجائے ورنہ پسماندہ علاقوں میں اس بیماری کی وجہ سے لوگ اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں ۔ افسوس ناک بات یہ ہے کہ ایک خاص قسم کا ٹائیفائڈ پاکستان میں تیزی سے پھیل رہا ہے جس کا علاج بھی فی الحال زیادہ کار گر نہیں اور ماہریں کے مطابق بہت جلد یہ ٹائیفائیڈ کی یہ قسم لا علاج ہو جائے گی ۔ماہرین نے ٹائیفائیڈ کی اس قسم کو ’ٹائیفائیڈ سپربگ‘ (Typhoid Superbug)کا نام دیا ہے۔۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس وائرس پر ہم نے پانچ قسم کے اینٹی بائیوٹکس کا استعمال کیا لیکن  5 میں سے 4 ناکام ہو گئے ہیں اور اگر اس وائیرس میں ایک اور جینیاتی تبدیلی ہو گئی تو پانچواں اینٹی بائیوٹک بھی ناکا م ہو جائے گا اور یہ بیماری لاعلاج ہو جائے گی ،۔ یاد رہے پاکستان میں اس وقت اس کے 850 سے زائد کیس سامنے آئے ہیں ۔ اوران میں تیزی سے اضافے کا خدشہ ہے۔ماہرین نے اس خطرے کا بھی امکان ظاہر کیا ہے کہ یہ مرض باقی دنیا میں بھی پھیل سکتا ہےآغا خان یونیورسٹی کی پروفیسر ڈاکٹر رومینہ حسن کا کہنا تھا کہ ”مختلف بیماریوں کے

وائرس اینٹی بائیوٹکس کے خلاف اپنے اندر مزاحمت پیدا کر رہے ہیں اور جدید ترین ادویات بے اثر ہوتی جا رہی ہیں۔اس صورتحال سے لگتا ہے گویا دنیا اس دور کی طرف واپس جا رہی ہے جب اینٹی بائیوٹکس ایجاد نہیں ہوئی تھیں

Comments

comments

پاکستان میں یہ خطرناک بیماری تیزی سے پھیل رہی ہے ۔ ماہرین کا انتباہ
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top