Urdu

پہلے یہ کام کر کے دکھاﺅ۔۔۔‘ نوجوان لڑکے کے ساتھ گھر سے بھاگنے والی لڑکی نے بھاگنے کے بعد شادی سے انکار کردیا، کیا شرط رکھی؟ بیچارہ عاشق تصور بھی نہ کرسکتا تھا

بھارت میں ہندو لڑکیوں کی قبول اسلام کے بعد مسلم لڑکوں کے ساتھ شادی کے واقعات اکثر سامنے آتے رہتے ہیں لیکن جودھ پور کی ایک ہندو لڑکی نے مسلم لڑکے کے ساتھ گھر سے فرار ہونے کے بعد یہ شرط رکھ دی ہے کہ پہلے وہ اپنا مذہب چھوڑ کر ہندو مذہب قبول کرے۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق 20سالہ ہندو طالبہ پوجا جوشی مسلم نوجوان محسن خان کی محبت میں گرفتار تھی۔ وہ اتوار کے روز محسن، جو کہ ٹیکسی ڈرائیور ہے، کے ساتھ گھر سے فرار ہو گئی۔ دونوں فرار ہو کر بیکانیر چلے گئے لیکن دریں اثناءلڑکی کے والدین اس کی گمشدگی کو رپورٹ درج کروا چکے تھے۔

پولیس نے بالآخر انہیں ڈھونڈ نکالا اور واپس جودھ پور لے آئی۔جب مقامی لوگوں کو پتا چلا کہ یہ جوڑا تھانے میں ہے تو ایک بڑا ہجوم تھانے کے باہر جمع ہو گیا۔ مشتعل لوگوں نے تھانے کے اندر گھس کر مسلمان نوجوان پر تشدد بھی کیا اور لڑکی کو بھی دھمکیاں دیں۔ یہ صورتحال پیدا ہونے کے بعد پوجا کی جانب سے یہ بیان سامنے آ گیا

کہ جب تک محسن ہندومت قبول نہیں کرتا وہ اس کے ساتھ شادی نہیں کرے گی۔پولیس کے مطابق پوجا نے اپنے والدین کے ساتھ جانے سے انکار کر دیا ہے اور اپنی ایک کزن کے ہاں مقیم ہے۔ اس کا کہناہے کہ جب محسن مذہب تبدیل کر لے گا تو وہ اس کے ساتھ شادی کر لے گی، اور تب تک اپنی کزن کے ہاں ہی مقیم رہے گی۔

Comments

comments

پہلے یہ کام کر کے دکھاﺅ۔۔۔‘ نوجوان لڑکے کے ساتھ گھر سے بھاگنے والی لڑکی نے بھاگنے کے بعد شادی سے انکار کردیا، کیا شرط رکھی؟ بیچارہ عاشق تصور بھی نہ کرسکتا تھا
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top