Urdu

کبھی بھی فریج میں گوندھا ہو ا آٹا نہ رکھیں

دنیا بھر میں جب بھی روٹی پکانی ہو تو اس کے لٓئے آٹا کے استعمال کیا جاتا ہے اور آٹا گوند کر اس سے روٹی پکائی جاتی ہے آہمارے گھرانوں میں ایساہی ہوتا ہے ۔ پہلے زمانے میں جب فریج کی سہولت نہیں تھی تو لوگ اتنا ہی آٹا گوندتے جتنی استعمال ہو سکتا اور اگر بچ بھی جاتا تو بہت کم بچتا ۔ لیکن جب سے فریج آیا ہے تن سے اندازے غلط ہونے لگے ہیں اور خواتین کئی دنوں کا آٹآ ایک ساتھ گوند کر رکھ لیتی ہے تا کہ مشقت سے بچا جا سکے ۔ ماہرین کے مطابق یہ عمل کرنا صحت کے لئے نقصان دہ ہوتا ہے ۔ کیونکہ آٹے میں  یہ خاصیت ہوتی ہے کہ وہ

مختلف چیزوں کو اپنے اندر جذب کر سکے ۔  اور جب فریج میں بہت ساری چیزین ہو تو ان کے ساتھ ہونے والے جراثیم بھی آٹے کی طرف منتقل ہو جاتے ہیں جو کہ پھر انسانی پیٹ کی طرف منتقل ہوجاتے ہیں اوربیماریوں کا سبب بنتے ہیں ۔ اس لئے یہ کوشش کریں کہ آٹا اتنا ہی گوندھے جو کہ ایک وقت میں استعمال ہوسکے دوسرے وقت کے لئے الگ سے تازہ آٹا گوندے تا کہ آپ

اور آپ کے گھر والے بیماریوں سے بچ سکے ۔ آج کل جو آٹآ خآص کر شہروں میں استعمال کیا جاتا ہے اس کی تمام غذائیت نکالی گئی ہوتی ہے یعنی اس سٓے سوجی ، اور میدہ کو الگ کر لیا جاتا ہے اور اس میں باقی غذائیت نہ ہونے کے برابر ہوتی ہے ۔ جس کے بعد یہ آٹا ایک پاوڈر کی طرح رہ جاتا ہے ۔ آپ نے دیکھا ہوگا کہ معدہ سے بنی ہوئی روٹی ٹھنڈی ہوجانے کے بعد قابل

استعمال نہیں رہتی تو ذرا خود سوچے اور تصور کریں کہ جو آٹآ فریج میں کئی دن پڑا ہو  تو وہ کیسے قابل استعمال ہو سکتا ہے ۔

 

Comments

comments

کبھی بھی فریج میں گوندھا ہو ا آٹا نہ رکھیں
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top