Urdu

یہ پیرعورتوں کو اپنی چادر میں لیجاکر انکو بوسہ دیتا ہے اور انکا اعلاج کرتا ہے

پاکستان میں جعلی پیر کی اصطلاح ایسے اشخاص کے لیے استعمال کی جاتی ہے جو غیبی طاقتوں یا کرشمہ سازی کے دعوی دار ہوتے ہیں، جس کا تعلق وہ کسی طرح دین اسلام سے جوڑتے ہیں۔ توہم پرست اور جاہل لوگوں کی کثیر تعداد ان کو اسلام کا ولی سمجھتے ہوئے ان کی مرید ہو جاتی ہے۔ جعلی پیر کے کچھ غنڈے اور کارندے کرشمہ سازی اور شعبدی بازی میں مدد دے کر لوگوں کو مرغوب کرتے ہیں۔ یہ لوگ اپنا تعلق پرانے صوفیوں سے جوڑتے ہیں اور عوام ان کو پہنچا ہوا سمجھتی اور کہتی ہے۔

جعلی پیر تعویز گنڈے کا کاروبار کرتے ہیں، لوگوں کو بتاتے ہیں کہ ان پر جنات کا سایہ ہے اور وہ جنات کو بھگانے کا علم جانتے ہوئے ان کا جنات سے چھٹکارا دلوا سکتے ہیں۔ ان سب کاموں کے یہ لوگوں سے پیشے وصول کرتے ہیں۔ بعض پیر جنات کو اپنے قبضہ میں بتاتے ہیں اور سائلوں کا ان کی مدد سے کوئی بھی کام کروا لینے کا دعوی کرتے ہیں جاہل عوام کے ذہن میں قرآن میں حضرت سلیمان اور جنات کے تذکرے کو ان پیروں کے قصوں سے جوڑ کر ان کی پیروی میں لگ جاتی ہے۔

بعض جھوٹے پیر مذہبی اور سیاسی رہنما کا روپ دھارتے ہیں۔ یہ تعویز گنڈے (یا جنات کو بھگانے) کا کام نہیں کرتے مگر قدرے پڑھے لکھے عوام کو مذہب کے نام پر بیوقوف بنا کر اپنا مرید بنا لیتے ہیں جس سے ان کی سیاسی اور کاروباری حیثیت میں اضافہ ہوتا ہے۔ یہ پیر بھی اکثر شعبدہ بازی کا استعمال کرتے ہیں۔ عرب دنیا میں ایسے رہنماوں کے لیے “fake sheikh” کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔

آج کی اس پوسٹ میں ہم آپکو ایک ایسے پیر کی ویڈیو دکھانے جارہے ہیں جو عورتوں کو اپنے ساتھ بٹھاتا ہے اور پھر چادر اوڑھ کر عورتوں کے ساتھ غلط فعال کرتا ہے. یہ عورتوں کو بوسہ بھی دیتا ہے اور انکے ساتھ سر عام ہی رنگ رلیاں مناتا ہے. حیرانگی کی بات یہ ہے کہ اس بے غیرت پیر کے پاس روزانہ ہزاروں عورتیں آتی ہیں اور اسکے ساتھ شرمناک کام کرنا انکے لیے ایک باعث فخر کام ہے. عورتوں کا کہنا ہے کہ پیر جی کے پاس آنے کے بعد انکی بہت سی مرادیں پوری ہوئیں ہیں اور انکی ایک پھوک سے ہمارے بہت سے کام هوئے ہیں

Comments

comments

یہ پیرعورتوں کو اپنی چادر میں لیجاکر انکو بوسہ دیتا ہے اور انکا اعلاج کرتا ہے
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top